Skip navigation (access key S)

Access Keys:

میری آمد پوشیدہ رکھیں

کسی سے ابھی بات کرنے ضرورت ہے؟

  • مفت، رازدارانہ قانونی مشورہ حاصل کریں

    08001 225 6653پر کال کریں
  • پیر تا جمعہ صبح 9 تا شام 8:00بجے
  • بروز ہفتہ صبح 9 بجے - دوپہر 12:30 بجے
  • کالیں 4 پنس/ منٹ – یا ہم سے واپس کال کرنے کیلئے کہیں

اپنے علاقے میں قانونی صلاحکار تلاش کریں

20 میرے بچے کو دھونسایا جاتا ہے اور میں نہیں سمجھتا کہ اسکول نے اس کو روکنے کے لیے حسب ضرورت کارروائی کی ہے۔ میں کیا کر سکتا ہوں؟

خواہ آپ دھونسائے جانے کے سلسلے میں اپنے بچے کے استاد اور صدر مدرس سے پہلے میٹنگ کر چکے ہوں، پھر بھی بہتر یہی ہے کہ باضابطہ شکایت کرنے سے پہلے اسکول انتظامیہ سے ایک بار اور بات کر لیں۔ دھونسائے جانے کے مسئلے کو بہترین طور پر اس وقت حل کر لیا جاتا ہے جب ہر شخص اسے حل کرنے کے لیے مل جل کر کام کرتا ہے۔ اس سے اسکول کو تحریری طور پر دھونسائے جانے کی اطلاع دینے اور میٹنگ کا مطالبہ کرنے میں مدد ملتی ہے۔

اس سے پہلے کہ آپ کوئی دوسری میٹنگ مقرر کریں یہ یقینی بنائیں کہ رویے اور دھونسائے جانے سے متعلق اسکول کی پالیسی کی کاپیاں آپ کے پاس محفوظ ہیں۔ اگر دھونسائے جانے کا تعلق آپ کے بچے کی جنس، نسل یا معذوری سے ہے تو اسکول کی یکساں مواقع کی پالیسی طلب کریں۔ آپ کو اپنے بچے کے اسکول ریکارڈ کی نقل حاصل کرنے کا بھی حق ہے جس میں دھونسائے جانے کے واقعات کی تفصیلات بھی شامل ہوتی ہیں۔ اسکول فوٹو کاپی کی معقول اجرت وصول کر سکتا ہے۔

اسکول سے بات کرنے سے پہلے اپنے بچے سے بات کریں۔ یہ یقینی بنائیں کہ جو بھی واقعہ پیش آیا ہے اس کی تفصیلات آپ ہر ممکن طور پر واضح شکل میں جانتے ہیں۔ دھونسائے جانے کے ہر واقعے اور اپنے بچے پر پڑنے والے اس کے اثر کی تفصیلات درج کرکے رکھیں۔

میٹنگ سے پہلے اسکول کی پالیسیوں سے متعلق مفید نکتوں کو یاد کر لیں۔ کسی بھی سوال کو لکھ لیں۔ جن باتوں پر آپ گفتگو کرنا چاہتے ہوں ان سب کی فہرست بنا لیں۔ میٹنگ میں جس نکتے پر بحث ہو چکے اس پر صحیح کا نشان لگا دیں اور جو کچھ کہا گیا ہو اسے لکھ لیں۔ میٹنگ کے خاتمے پر ہر نکتے کو دہرائیں تاکہ ہر شخص یکساں تاثر لے کر اٹھے۔ اس بات کا جائزہ لینے کے لیے کوئی تاریخ مقرر کریں کہ اسکول کے اقدام کا کیا اثر ہو رہا ہے۔

اگر اسکول انتظامیہ کے ساتھ آپ کی میٹنگ سے دھونسائے جانے کے واقعات نہیں رکتے تو آپ کو باضابطہ شکایت داخل کرنے کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔ آپ کو اسکول کے ضابطہ شکایات کی نقل مانگنی چاہیے۔ اگر اسکول کے سرکردہ عملے نے مسئلے کو حل نہ کر دیا ہو تو اس میں آپ کو یہ کرنا ہوگا کہ گورننگ باڈی کے پاس شکایت داخل کریں۔ یہ ظاہر کرنے کے ایک طریقے کے طور پر کہ آپ اس مسئلے کو کتنی سنجیدگی سے لے رہے ہیں آپ کا مراسلہ گورنروں کو آپ کے بچے کی نگہداشت سے متعلق ان کے قانونی فرض سے آگاہ کر سکتا ہے۔ آپ مقامی مقتدرہ کے ایجوکیشن ڈائرکٹر یا اپنے ایم پی کو بھی اپنی شکایت بھیج سکتے ہیں۔

دھونسائے جانے سے متعلق اسکولوں کے خلاف کامیاب قانونی کارروائیاں اکا دکا ہی ہوتی ہیں، اگرچہ بعض معاملات عدالت سے باہر ہی حل ہو جاتے ہیں۔ اگر آپ یہ محسوس کرتے ہیں کہ آپ کے بچے کے اسکول نے کوتاہی برتی ہوگی اور آپ عدالت میں اس کے خلاف کارروائی کرنا چاہیں تو آپ کو کسی وکیل سے مشورہ کرنا ہوگا۔ ان معاملات کے لیے قانونی مدد عموماً دستیاب نہیں ہوتی۔ آپ اختصاصی مشورے کے لیے ہمارے تعلیمی امور کے صلاح کاروں میں سے کسی سے بات کر سکتے ہیں، لیکن ایسی براہ راست مدد کم ہی ہو سکتی ہے جو ہم آپ کو فراہم کر سکیں۔

واپس اوپر جائیں